233

کورونا وائرس کے باعث ایشیاء کپ کیلئے صورتحال غیر یقینی ہے: احسان مانی

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئر مین احسان مانی کا کہنا ہے کہ ایشیاء کپ کے لیے صورتحال غیر یقینی ہے۔ دنیا بھر میں کورونا وائرس پھیلنے کے سبب کھیلوں کی سرگرمیاں معطل ہوکر رہ گئی ہیں اورایک کے بعد ایک سپورٹس ایونٹ منسوخ ہو رہے ہیں۔ پاکستان سپر لیگ فائیو، انڈین پریمیئر لیگ سیزن 13، ٹوکیو اولمپکس 2020ء اور اس طرح دیگر چھوٹے بڑے ایونٹ کرونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ کھیلوں کے تینوں بڑے ایونٹس کے بعد اب ایشیاء کرکٹ کپ 2020ء کے انعقاد کے بارے میں بھی شکوک و شبہات پیدا ہوگئے ہیں۔
بھارتی خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے احسان مانی کا مزید کہنا تھا کہ خطے کی موجودہ صورتحال میں ایشیاء کپ کا انعقاد غیر یقینی ہے، ایشیاء کپ کے انعقاد کےحوالے سے ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا غیر یقینی حالات میں ہے، امید ہے ایک ماہ کے اندر کورونا وائرس کی صورتحال واضح ہو جائے گی، ایشیا کپ 2020ء کی میزبانی پاکستان نے کرنا ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل بھارتی کرکٹ بورڈ کا کہنا تھا کہ رواں سال ایشیاء کپ کے انعقاد ہونا مشکل نظر آ رہا ہے۔
بھارت کے کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) کے ایک عہدیدار کا کہنا تھا کہ ایشیاء کرکٹ کپ 2020 کے انعقاد کے بارے میں بھی شکوک و شبہات پیدا ہو گئے ہیں اور امکان ہے کہ شاید ایونٹ بھی آئندہ برس تک کے لیے ملتوی کر دیا جائے۔
بھارتی خبر رساں ادارے سے گفتگو کے دوران بی سی سی آئی کے عہدیدار نے بتایا کہ امکان ہے کہ موجودہ حالات میں شاید ایشیاء کرکٹ کپ 2020ء رواں سال منعقد نہ ہو سکے۔ بی سی سی آئی کے عہدیدار کا یہ بھی کہنا تھا کہ کووڈ 19 سے معیشت پر تو برے اثرات مرتب ہوئے ہیں، کھیلوں کے منتظمین کو بھی اس سے شدید نقصان پہنچا ہے۔ بی سی سی آئی کو بہت سی مشکلات درپیش ہیں۔ جن سے نمٹنا بھی ایک چیلنج ہے۔
آئی اے این ایس کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) ایشیاء کپ 2020ء کا میزبان ہے، اس نے رابطہ کرنے پر رواں سال ستمبر میں منعقد ہونے والے ایشیاء کپ ٹورنامنٹ کے حوالے سے زیادہ معلومات فراہم نہیں کیں۔
پی سی بی کے عہدیدار نے بتایا کہ ایشین کرکٹ کونسل کا اگلا اجلاس کب ہو گا اور ایشیاء کپ سے متعلق کیا فیصلے ہوں گے، اس بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ بھارت کے وزیر برائے کھیل کرن رجیجو کے مطابق رواں سال اپریل کے وسط میں ہی انڈین پریمیر لیگ کے انعقاد کا حتمی فیصلہ متوقع ہے۔ اس حوالے سے حتمی فیصلے کا اختیار صرف بی سی سی آئی کے پاس ہے۔ کرن کا مزید کہنا تھا کہ اس وقت شہریوں کی حفاظت کو ترجیح دی جا رہی ہے اور حکومتی ہدایات پر سختی سے پابندی کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں