131

کورونا سے اموات میں 87 فیصد کمی کے باوجود لاپرواہی کی گنجائش نہیں، ڈاکٹر ظفر مرزا

اسلام آباد، وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس سے اموات میں 87 فیصد کمی آئی، تاہم اب بھی لاپرواہی کی گنجائش نہیں ہے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری بیان میں ان کا کہنا تھا کہ الحمدللہ آج پاکستان میں گزشتہ تین ماہ کے دوران کووڈ۔19 سے سب سے کم اموات ریکارڈ ہوئی ہیں۔ پیر کو اپنے ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ 20 جون کو ہونے والی 153 اموات کے مقابلے میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 20 اموات رپورٹ ہوئیں، یعنی کورونا وائرس سے اموات میں 87 فیصد کمی آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب بھی کسی لاپرواہی کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ روز ڈاکٹر ظفر مرزا نے قومی کو خوشخبری دیتے ہوئے بتایا تھا کہ پاکستان میں کورونا کیسز میں 80 فیصد کمی ہوئی ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران میڈٰیا کو بریفنگ میں ان کہنا تھا کہ کورونا سے متعلق صورتحال بہتر ہو رہی ہے۔ عالمی سطح پر بھی پاکستان میں کورونا کیسز میں کمی کا اقرار کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں عالمی اداروں کے اندازے دھرے کے دھرے رہ گئے، 2 لاکھ 73 ہزار تشخیص شدہ مریضوں میں سے 2 لاکھ 37 ہزار صحتیاب ہوئے۔ ظفر مرزا نے کہا کہ پاکستان کو اب 2 بڑے چیلنجز عید اور محرم الحرام پر درپیش ہیں۔ عید اور محرم الحرام کے دوران کورونا کے چیلنج کا سامنا ہوگا۔ معاون خصوصی صحت نے کہا کہ پاکستان میں کورونا کیسز میں دوبارہ اضافہ ہو سکتا ہے۔ عیدالفطر پر سماجی فاصلہ نظر انداز کرنے سے کورونا پھیلا، سماجی فاصلہ اور احتیاطی تدابیر کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ عیدالاضحیٰ پر انتہائی سمجھ داری کے ساتھ فیصلے کرنے ہیں، عیدالاضحیٰ کیلئے بہت پہلے سے تیاری شروع کی ہے، عیدالاضحیٰ کیلئے علمائے کرام سے مشاورت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں