193

چین نے شینگڈو میں امریکی قونصل خانہ بند کرا دیا

بیجنگ، چین نے اپنے صوبے سیچوان کے شہر شینگڈو میں امریکی قونصل خانے کو بند کرا دیا ہے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق چين اور امریکا کے درمیان کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگیا ہے اور چین نے امریکا کی جانب سے ہیوسٹن میں واقع چینی سفارت خانے کو بند کرنے کے جواب میں اپنے صوبے سیچوان کے شہر شینگڈو ميں واقع امريکی قونصل خانہ بند کرا دیا ہے۔ چین نے امریکی سفارتکاروں کو قونصل خانہ خالی کرنے کے لیے 72 گھنٹے کی مہلت دی تھی جس کے بعد قونصل خانہ خالی کردیا گیا اور عمارت پر سے امریکی پرچم بھی اتار لیا گیا ہے۔ بعد ازاں چینی حکام شینگڈو کے امریکی قونصل خانے میں داخل ہوئے اور عمارت کا کنٹرول سنبھال لیا۔ چین کی جانب سے شینگڈو میں امریکی قونصل خانے کو بند کرانے کی وجہ نہیں بتائی گئی ہے۔ ادھر امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نے چینی اقدام کو حیران کن قرار دیتے ہوئے کہا کہ شینگڈو میں امریکی قونصل خانے نے 35 سال تک دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے لیے اہم کردار ادا کیا ہے۔


دوسری جانب امریکی سفارتی عملے نے 72 گھنٹے کی ڈیڈ لائن ختم ہونے پر چین کے شہر چینگ ڈو میں قونصل خانہ چھوڑ دیا۔ چین میں آج صبح امریکی سفارتی عملے کو عمارت سے نکلتے دیکھا گیا، تختی ہٹا دی گئی اور امریکی پرچم عمارت سے اتار دیا گیا، چینی وزارت خارجہ نے بتایا کہ چینی عملے نے عمارت میں داخل ہو کر اس کا کنٹرول سنبھال لیا۔ اس دوران بہت سے افراد قونصل خانے کے باہر جمع ہو گئے، واضح رہے کہ امریکی شہر ہیوسٹن میں چینی قونصل خانہ بند کرنے کے جواب میں چین نے چینگ ڈو میں امریکی قونصل خانے کی بندش کا حکم دیا تھا۔
چینگڈو اور ہیوسٹن کے قونصل خانوں کی بندش نے دنیا کی بڑی معیشتوں کے تعلقات میں تناو کی کیفیت پیدا کر دی ہے جو ایک دہائی پہلے سے ہی مالیاتی اور ٹیکنالوجی اختلافات کی وجہ سے بگاڑ کا شکار تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں