61

پہلی مرتبہ کسی نجی ادارے کے خلانوردوں کی زمین پر واپسی

فلوریڈا: امریکا نے ایک اور تاریخ رقم کردی 2 امریکی خلا باز خلا سے زمین پر بحفاظت واپس پہنچ گئے۔ لیکن اس واقعے میں دو خاص باتیں ہیں، اول اپالو پروگرام کے 40 سال بعد اور کسی نجی کمپنی کے تیارکردہ خلائی جہاز کی بدولت دو خلانورد بین الاقوامی خلائی اسٹیشن سے زمین پر اترے لیکن انہیں ایک پیراشوٹ والے کیپسول کے ذریعے خلیجِ میکسکو کے پانی میں اتارا گیا ہے۔ چارخاص پیراشوٹ کے ذریعے خلانورد ڈوگ ہرلے اور اور باب بینکن اس کیپسول میں سوار تھے اور مددگارعملہ اس تک پہنچ کر فوری طور پر خلانوردوں کو کیپسول سے بحفاظت نکال لیا گیا ہے۔ یہ خلانورد اسپیس ایکس کمپنی سے تعلق رکھتے تھے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل 1970ء کے عشرے میں چاند تک رسائی کے اپالو پروگرام کے تحت خلانوردوں کو پیراشوٹ کے ذریعے سمندروں میں اتارا جاتا رہا تھا۔ اس کے بعد خلانورد خلائی شٹل کے ذریعے آتے اور جاتے رہے۔ لیکن اب ایک عرصے کے بعد خلانورد دوبارہ روایتی طریقے سے سمندروں میں اترے ہیں۔ امریکی خلانوردوں نے ماہ مئی کے اختتام میں کمپنی اسپیس ایکس کے خلائی جہاز ڈریگون کیپسول سے اپنا خلائی مشن شروع کیا تھا جب کہ تاریخی لحاظ سے پہلی مرتبہ کسی نجی خلائی راکٹ اور کیپسول کے ذریعے دو خلانوردوں کو زمینی مدار میں زیرِ گردش بین الاقوامی خلائی اسٹیشن تک کامیابی سے پہنچایا گیا تھا۔
دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے خلائی مشن مکمل ہونے پر قوم کو مبارکباد دی ہے۔
یاد رہے کہ 45 برس قبل ایک اپولو خلا گاڑی بحرالکاہل میں اتری تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں