223

سندھ میں شام 5 سے رات 8 بجے تک شہریوں کے گھروں سے نکلنے پر پابندی عائد

کراچی: صوبہ سندھ میں ماہ رمضان المبارک میں شہریوں پر شام 5 بجے سے رات 8 بجے تک گھروں سے نکلنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ محکمہ داخلہ سندھ نے ماہ رمضان المبارک کے لئے ایس او پیز جاری کردی ہیں جس کے تحت تراویح نماز کی ادائیگی گھروں پر ہوگی اور شام 5 بجے سے رات 8 بجے تک شہریوں کے گھروں سے نکلنے پر پابندی ہوگی۔
حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ صوبے میں کریانہ اسٹورز، سبزی اور گوشت کی دکانیں صبح 8 بجے سےشام 5 تک کھلی رہیں گی، اور دودھ کی دکانوں کو رات آٹھ بجے تک کام کی اجازت ہوگی، جب کہ ریستوران کو تیار کھانے شام 5 سے رات 10 بجے تک ڈیلیوری کی اجازت ہوگی۔ حکم نامے کے مطابق افطار کے روایتی پکوان فروٹ چاٹ، سموسے اور پکوڑے کے اسٹالز لگانا ممنوع ہوگا، فروٹ چاٹ سموسے پکوڑے جلیبی اوردیگر روایتی پکوان ہوم ڈیلیوری کیےجاسکیں گے، ہوٹلز میں ٹیک اوے کی اجازت نہیں ہوگی، ریستوران ہوم ڈیلیوری ڈرائیو تھرو سروس شام 5 سے رات 10 بجے تک کرسکیں گے، پبلک ٹرانسپورٹ، ڈبل سواری اور عمومی کاروباری سرگرمیوں پر پابندی ہوگی۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ احترام رمضان آرڈیننس پر سختی سے عمل کرنا ہوگا، کسی پیداواری غیر پیداواری یونٹ یا دکان مالک نے حکم نامے کی خلاف ورزی کی تو انکی کاروباری سرگرمی مکمل بند کردی جائےگی، خلاف ورزی کے مرتکب افراد کے خلاف سندھ وبائی امراض کنٹرول ایکٹ 2014ء کے سیکشن 4 کے مطابق کارروائی ہوگی۔
صوبائی محکمہ داخلہ نے طبی ماہرین کی مشاورت سے مساجد میں نماز سےمتعلق پابندیوں کا نوٹفکیشن بھی جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ تراویح اور فرض نمازیں گھروں میں ادا کی جائیں، فرض نمازوں اور تراویح سے متعلق حکمنامہ 23 اپریل سے نافذ العمل ہوگا اور حکمنامے کا اطلاق رمضان کے اختتام تک ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں