197

بھارت کرکٹ میں سیاست لانے کی روش پر برقرار

لاہور: بھارت کرکٹ میں سیاست کو لانے کی روش پر برقرار ہے جب کہ باہمی سیریز سے انکاری بورڈ کی جانب سے جواز تراشی کا سلسلہ جاری رہا۔

پاکستان سے باہمی سیریز سے مسلسل انکار کرنے والے بھارتی بورڈ نے ایک بار پھر پرانا موقف دہراتے ہوئے کرکٹ میں سیاست کی سوچ پروان چڑھائی ہے، ایک غیر ملکی خبررساں ادارے سے گفتگو میں بی سی سی آئی کے عہدیدار نے کہا کہ حکومت کی اجازت کے بغیر پاکستان سے میچز نہیں کھیل سکتے، آئی سی سی کی تنازعات کے حل کیلیے قائم کی جانے والی کمیٹی نے بھی ہمارا موقف تسلیم کیا جس کی وجہ سے پی سی بی ہرجانہ وصولی کیس میں ناکام رہا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے وکلا نے کمیٹی کو بتایا کہ یہ صرف پاکستان کے ساتھ باہمی سیریز کی بات نہیں، بی سی سی آئی کو کسی بھی ایونٹ میں شرکت کیلیے حکومت کی اجازت درکار ہوتی ہے، کلیئرنس نہ ملے تو ہم کچھ نہیں کرسکتے،آئی سی سی نے ہمارا یہ موقف تسلیم کیا،اب بھی صورتحال یہی ہے کہ پاکستان کے ساتھ حکومت کی اجازت ملنے پر ہی کھیل سکتے ہیں، موجودہ صورتحال میں صرف آئی سی سی ایونٹس میں ہی دونوں ملکوں کی ٹیمیں آمنے سامنے آتی ہیں۔
بورڈ عہدیدار نے ویمنز چیمپئن شپ میں پاکستان اور بھارت کے میچز ممکن نہ ہونے پر ٹیکنیکل کمیٹی کی جانب سے پوائنٹس دونوں ٹیموں میں برابر تقسیم کرنے کے فیصلے کو سراہتے ہوئے مسرت کا اظہار کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں